شہباز شریف نے اربوں روپے کے تحائف کی لین دین کی، نیب نے دستاویزات حاصل کرلیں

 نیب لاہور کی تحقیقاتی ٹیم نے سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کی جانب سے فیملی اراکین کو اربوں روپے مالیت کے تحائف لینے اور دینے کی دستاویزات حاصل کرلیں۔

قومی احتساب بیورو میں منی لانڈرنگ اور آمدن سے زائد اثاثہ جات انکوائری میں شہباز شریف کے اربوں روپے مالیت کے تحائف حاصل کرنے اور بیوی بچوں کو دینے کے شواہد حاصل کرلیے گئے ہیں۔

نیب کی جانب سے حاصل کی گئی تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے 24 کروڑ سلمان شہباز اور حمزہ شہباز کو دئیے اور اربوں روپے مالیت کی اراضی اہلیہ نصرت شہباز اور کروڑوں روپے کے مکانات، پلاٹس تہمینہ درانی کو دئیے۔
اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہباز شریف نے بیوی بچوں کو 24 کروڑ 22 لاکھ 77 ہزار 400 روپے تحائف میں دئیے اور شہباز شریف نے اپنے بیٹوں سے 4 کروڑ 26 لاکھ 80 ہزار 678 روپے تحفے میں وصول بھی کیے۔

شہباز شریف نے نصرت شہباز کو 749 کنال اراضی تحفے میں دی، شہباز شریف کو والدہ سے 867 کنال 18 مرلے جب کہ والد سے 748 کنال 19 مرلے کی قیمتی اراضی تحفے میں ملی۔ شہباز شریف نے 2015 میں تہمینہ درانی کو ڈیفینس میں دو کروڑ چالیس لاکھ کا پلاٹ تحفے میں دیا جب کہ تہمینہ درانی کو ہری پور میں ایک کاٹیچ اور ایک ولا بھی خرید کردیا جس کی مالیت ایک کروڑ تریسٹھ لاکھ روپے ہے۔

سابق وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے 12-2011 میں سلمان شہباز کو 17 کروڑ 12 لاکھ 48 ہزار 200 روپے جب کہ حمزہ شہباز کو شہباز شریف 15-2013 میں 3 کروڑ 7 لاکھ روپے تحفے میں دے چکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں