شیطانی خاکوں کی دوبارہ اشاعت شرمناک حرکت ہے:وجیہ الحسن جعفری

فرینکفرٹ (سیّد اقبال حیدر)پاکستان ایسوسی ایشن جرمنی کے صدر وجیہ الحسن جعفری نے فرانسیسی میگزین ”چارلی ہیبڈو“ نے دوبارہ خاکوں کی اشاعت پر نہایت غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس اخبار نے کئی برس پہلے بھی یہی شیطانی عمل کیا تھا جس سے امّت مسلمہ کی شدید دل آزاری ہوئی تھی اس کے ردِّعمل میں اخبار کے عملے کا قتلِ عام ہوا،وہ بھی غیر انسانی فعل تھا مگر وہ انسانی جانوں کا نقصان اخبار کی شیطانی اشاعت کے نتیجے میں ہوا تھا جس کی دنیا بھر نے مذمت کی تھی، لاکھوں افراد نے اس قتلِ عام کی مذمت میں پیرس کی سڑکوں پر احتجاجی مارچ کیا تھا ”چارلی ہیبڈو“ میگزین کے مالکان اور عملے نے اس تکلیف دہ سانحے سے کوئی سبق نہیں سیکھا اور آج پھر ختمی مرتبت ﷺ کی شان میں گستاخی کرتے ہوئے دوبارہ ایسے شرمناک خاکوں کی اشاعت کی ہے جس سے دنیا بھر کے مسلمان سراپا احتجاج ہیں،پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کے اجلاس میں دنیا کی توجہ اس نازک مسئلہ پر دلائی تھی کہ انبیا و مرسلین کی شان میں گستاخی کرنے والوں کے خلاف عالمی قانون ہونا چاہئے تاکہ دنیا میں امن قائم رہ سکے مگر سلامتی کونسل نے اس پر کوئی اقدام نہیں اٹھایا اور آج پریس کی آزادی کے نام پر پھر ایک بار دنیا میں بڑی تعداد میں بسنے والے مسلمانوں کا دل دکھایا گیا ہے، وجیہ الحسن جعفری نے فرانسیسی صدر سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ ”چارلی ہیبڈو“ کی اس شرمناک اشاعت کے خلاف فوری نوٹس لیتے ہوئے اس اخبار کی اشاعت پر پابندی عائید کریں تاکہ فرانس میں مذہبی بنیادوں پر بدامنی کی روک تھام ہو اور ملک میں امن و امان قائم رہ سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں