اوورسیز پاکستانیوں کا ملک کی ترقی میں اہم کردار ہے:زاہد حسین

فرینکفرٹ(سیّد اقبال حیدر) فرینکفرٹ میں مساجد کے علماء کرام اور معززین کے ایک وفد نے پاکستان کونسلیٹ فرینکفرٹ میں حال ہی میں تشریف لانے والے کونسلیٹ جنرل آف پاکستان زاہد حسین سے ملاقات کی اور انھیں کیمونٹی کے مسائل سے آگاہ کیا،وطن عزیز پاکستان اور جرمنی میں مقیم پاکستانی کیمونٹی کے مفاد میں پاکستانی کونسلیٹ سے ہر طرح کے تعاون کی یقین دھانی دلائی،اس ملاقات کے دوران پاکستانی کیمونٹی کے مسائل میں، فرینکفرٹ کونسلیٹ میں رابطے کی بہتری اور خصوصا ٹیلیفون کے نظام کو بہتر بنانا،نادرہ اوہ POC کے کارڈ،پاسپورٹ کے حصول،انکوائری میں تاخیر،فرینکفرٹ کونسلیٹ میں دوردراز سے آنے والے پاکستانیوں کے مسائل،کشمیر ایشو پر مؤثراور جامع اقدامات،ملکی و قومی تہواروں کوکیمونٹی کے ساتھ منا کر کیمونٹی اور کونسلیٹ کے درمیان فاصلے کم کرنا جیسے اہم مسائل پر تفصیلی گفتگو ہوئی،وفد میں مساجد اور دینی اداروں کی نمائندگی منہاج القرآن فرینکفرٹ کے ڈائیریکٹریکٹر علامہ سیّد فرحت حسین شاہ، ہردلعزیز مذہبی اسکالرعلامہ عبدالطیف چشتی،ادارہ پاک دارالسلام کے جنرل سیکرٹری سیّد حامد شاہ،پاکستانی کیمونٹی کے معززین میں طفیل حسین بٹ،چوہدری احسن تارڑ،محمد خوشحال خان،ایاز چیمہ،محمد حسین کشمیری،محمد اقبال خان،چوہدری وقار شریک تھے۔اس موقع پر سیّد حامد شاہ نے کہا کہ آج ہم سب کا کونسلیٹ میں آنا اپنے ذاتی روابط قائم کرنے کے لئے نہیں بلکہ کونسلیٹ جنرل صاحب کو خوش آمدید کہنا اور اپنی پاکستانی کیمونٹی کے مسائل سے آگاہ کرنا تھا،کونسلیٹ جنرل آف پاکستان زاہد حسین نے وفد کو کونسلیٹ میں خوش آمدید کہتے ہوئے کہا وہ پاکستانی کیمونٹی کے مسائل کے حل کے لئے ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہے ہیں،کیمونٹی کے جن مسائل کی آج نشاندہی کی گئی انھیں حل کیا جائے گا، کونسلیٹ کے دروازے تمام پاکستانیوں کے لئے کھلے ہیں تمام پاکستانی ان کے لئے بلا امتیاز محترم ہیں وہ اور ان کا سٹاف کیمونٹی کی مدد کے لئے ہروقت موجود رہے گا، بعد ازاں سیّد اقبال حیدر سے فون پر گفتگو میں کونسلیٹ جنرل آف پاکستان زاہد حسین نے کہا کہ فرینکفرٹ کونسلیٹ میں ان کی یہ دوسری پوسٹنگ ہے،اپنے ڈپلومیٹک کیریر کے دوران انھوں نے ہمیشہ کوشش کی کہ بیرون ملک پاکستان اور پاکستانی کیمونٹی کا وقار بلند ہو،ملک سے باہر ہر فرد اپنے ملک کا سفیر ہوتا ہے،جرمنی میں مقیم ہر پاکستانی کوجرمن قانون کی پاسداری کرتے ہوئے اپنے رہن سہن اور طرز زندگی سے ملک کا وقار بلند کرنا چاہئے،اپنے بچوں کی تعلیم اور تربیت پر اس طرح توجہ دیں کہ ان میں ڈاکٹر،انجنیر، سائیندان سامنے آئیں اور ملک کا نام روشن کریں، ان کی خواہش ہے کیمونٹی کے افرادمعمولی اختلافات کو بھلا کر اپنے بھائی چارے اور باہمی روابط سے ملکی ترقی میں مثبت کردار ادا کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں