جنرل سلیمانی کو شہید کرنا امریکا کی دہشت گردی ہے، وفاقی وزیر غلام سرور

شہری ہوابازی کے وفاقی وزیر غلام سرور خان نے کہا ہے کہ امریکا نے استقامتی محاذ کے کمانڈروں کو خباثت آمیز اور بزدلانہ طریقے سے شہید کرکے مغربی ایشیا کو پہلےسے بھی زیادہ غیر مستحکم بنا دیا ہے

شہری ہوابازی کے وفاقی وزیر غلام سرور خان نے کہا ہے کہ امریکا نے استقامتی محاذ کے کمانڈروں کو خباثت آمیز اور بزدلانہ طریقے سے شہید کرکے مغربی ایشیا کو پہلےسے بھی زیادہ غیر مستحکم بنا دیا ہے

پاکستان کے وفاقی وزیربرائے شہری ہوابازی غلام سرور خان نے ایران کی سپاہ قدس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اور عراق کی عوامی رضاکار فورس کے ڈپٹی کمانڈر ابو مہدی المہندس کو شہید کرنے کے امریکا کے دہشت گردانہ اقدام کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکا نے اپنے اس جارحانہ اقدام کے ذریعے خلیج فارس کے علاقے میں کشیدگی میں مزید اضافہ کردیا ہے –

انہوں نے بغداد ہوائی اڈے پر ڈرون طیارے کے حملے کے ذریعے جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے ساتھیوں کوشہید کرنے کے امریکی اقدام کوجنگی جرم ، انسانی حقوق کی کھلی پامالی اورعراق کی ارضی سالمیت اور اقتداراعلی کی خلاف ورزی قراردیا –

پاکستان کے وفاقی وزیرغلام سرور خان نے کہا کہ امریکا نے اپنے اس دہشت گردانہ اقدام سے ثابت کردیا ہے کہ وہ کسی بھی بین الاقوامی قانون کی پابندی نہیں کرتا –

سنی اتحاد کونسل پاکستان کے سربراہ مولانا حامد رضا نے بھی جنرل قاسم سلیمانی کو شہید کرنے کے امریکی اقدام کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ یہ قتل خطے میں امریکی فوجیوں کی نابودی کا نقطہ آغاز ہے – سنی اتحاد کونسل پاکستان کے سربراہ نے کہا کہ امریکا نے جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کرکے بدترین جرم کا ارتکاب کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں