فرینکفرٹ میں بیاد سیّد الشہداطرحی محفل مسالمہ

اسلام کی بقا کی ضرورت حسینؑ ہیں

رپورٹ: رضا حسین

ہیومن ویلفئر ایسوسی ایشن جرمنی نے پچھلے کئی سالوں کی طرح امسال بھی محرم الحرام کے ایامِ عزا میں بیاد سیّد الشہدا حضرت امام حسین ؑ ایک طرحی محفلِ مسالمہ کا اہتمام کیا،تقریب کے تنظیم کے چیرمین معروف شاعر سید اقبال حیدر اس نورانی محفل کے میزبان تھے،تقریب کی صدارت سویڈن سے تشریف لائے جناب مولانا ذاکر حسین نے کی اور مہمانان خصوصی سید وجیہ الحسن ،ملک شمشاد صاحب تھے۔

اس نورانی محفل میں مصرع طرح.. اسلام کی بقا کی ضرورت حسینؑ ہیں پر شعرائے کرام نے شہدائے کربلا کے حضور منظوم نذرانہ عقیدت پیش کیا،تقریب کا آغاز کرتے ہوئے میزبان سید اقبال حیدر نے کہا کہ یورپ کے اس ماحول میں محرم الحرام اور دیگر مذہبی اہم دنوں کی یاد منانا ہم سب کا فرض ہے تاکہ ہماری آئیندہ نسلوں میں یہ روایات قائم رہیں،نواسہ رسول ؐ حضرت امام حسینؑ نے اپنے خون کا نذرانہ پیش کر کے اسلام کو نئی زندگی دے دی ،تقریب کا آغاز معصوم بچیوں کسا ء اور ردا نے تلاوتِ قرآن پاک سے کیا۔
اور اس کے بعدشعرائے کرام نے اپنا کلام سامعین کی خدمت میں پیش کیا ۔

جناب عطاوالرحمن اشرفؔ صاحب ؂ خاک کربلا کو خاک شفا بنایا ۔ دین حق کی ایسی کرامت حسین ؑ ہیں 
جناب افضل قمرؔ صاحب ؂ گھبرایا روبروئے نکیرین میں ذرا ۔ مرا سلام اٹھائے ہوئے آ گئے حسین ؑ 
جناب طاہر عدیم صاحبؔ ؂ تو گویا چاند نکلنے ہو ہے محرم کا ۔ بدن کے دشت میں کھلنے لگے ہیں سرخ گلاب
جناب سید اقبالؔ حیدر صاحب ؂ وجہہ بقائے دین و شریعت حسینؑ ہیں ۔ اسلام تیری عزت و حرمت حسینؑ ہیں 
جناب علامہ شمشاد حسین رضوی صاحب ؂ صدرِ مسالمہ کی یہ خدمت قبول ہو ۔ میرے ضیاؔ کی ساری ضرورت حسین ؑ ہیں

صدر محفل جناب مولانا ذاکر جناب مولانا ذاکر صاحب نے سے خطبۂ صدارت کا آغازکیا اور کہا کہ واقعہ کربلا حق و باطل کا معرکہ تھا،نواسہ رسول حضرت امام حسینؑ نے اپنی اور اپنے خاندان کی قربانی دیکر اسلام کی نصرت کی اور ہمیں ہمیشہ کے لئے سبق دیا کہ کبھی باطل سر اٹھائے تو اس کے سامنے حق کی سربلندی کے لئے قربانیوں سے بھی گریز نہ کرو،انھوں نے تقریب کے میزبان سید اقبال حیدر کو مبارکباد دی کہ وہ جرمنی میں علم وادب ،شعرو سخن کی محفلیں منعقد کر کے یورپ میں کارِ خیر کر رہے ہیں۔تقریب میں پاکستان جرمن پریس کلب کے اراکین کے علاوہ کثیر تعداد میں محبان اہلبیت نے شرکت کر کے ختمی مرتبت کے حضور ان کے نواسے کا پُرسہ دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں