فضل الرحمان نے اپنے اجداد کی فکری ترجمانی کی ہے، علامہ مبارک موسوی

ایم ڈبلیو ایم پنجاب کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ منافقین کا چہرہ کھل کر عوام کے سامنے آ گیا ہے اور عوام نے دین فروشوں کو انتخابات میں بری طرح رد کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عوام چودہ اگست منانے کی بھرپور تیاری کریں اس سال پورے پاکستان کی عوام چودہ اگست کو شایان شان طریقے سے منا کر بانی پاکستان اور پاکستان کے شہدا کو خراج تحسین پیش کریں

 مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل پنجاب علامہ سید مبارک علی موسوی نے فضل الرحمٰن کے 14 اگست سے متعلق بیان کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جس انسان نے 30 سال اقتدار کے مزے لوٹے ہوں اور اچانک سے سب آسائشیں چھن جائیں اس بوکھلاہٹ کے شکار شخص سے ایسے ہی بیان کی توقع کی جا سکتی ہے۔ لاہور  میں وحدت یوتھ کے ملاقات کرنیوالے وفد سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ فضل الرحمٰن جیسے شخص کے منہ سے پاکستان مخالف بیان کوئی نئی بات نہیں،

ان کے اجداد بھی قیام پاکستان کے مخالف تھے اور یہی لوگ تھے جنہوں نے کہا کہ ہم پاکستان بنانے کے گناہ میں شامل نہیں، فضل الرحمان نے اپنے اجداد کی فکری ترجمانی کی ہے۔ علامہ مبارک علی موسوی نے مزید کہا کہ ان منافقین کا چہرہ کھل کر عوام کے سامنے آ گیا ہے اور عوام نے دین فروشوں کو انتخابات میں بری طرح رد کر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عوام چودہ اگست منانے کی بھرپور تیاری کریں اس سال پورے پاکستان کی عوام چودہ اگست کو شایان شان طریقے سے منا کر بانی پاکستان اور پاکستان کے شہدا کو خراج تحسین پیش کریں۔ علامہ مبارک علی موسوی نے وحدت یوتھ کو چودہ اگست کو شایان شان منانے کی ہدایات بھی جاری کیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں